Okzaii

گاجر

گاجر ایک بہترین موسمی سبزی ہے۔ گاجر موسم سرما میں بڑی تعداد میں دستیاب ہوتی ہے۔ گاجر کا مزاج گرم اور نمی مائل ہوتا ہے۔ گاجر ایک ایسی سبزی ہے جو جلدی خراب نہیں ہوتی ہے۔ گاجر کو لمبے عرصے تک محفوظ کیا جاسکتا ہے۔ گاجر کا حلوہ بھی بنایا جاتا ہے۔ اور گاجر کا حلوہ بہت ذائقہ دار ہونے کی وجہ سے سردیوں میں بہت شوق سے کھایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ گاجر کا جوس بھی بنایا جاتا ہے۔ گاجر خرگوش کی مرغوب غذا ہے۔ گاجر کی دو اقسام پائی جاتی ہیں۔ گاجر کی پہلی قسم دیسی گاجر اور گاجر کی دوسری قسم ولائیں گاجر ہوتی ہے۔ دیسی گاجر سیاح سرد مائل ہوتی ہے۔ اور ولائیں گاجر ذرد سرخ مائل ہوتی ہیں۔ گاجر کو اچھی طرح صاف کرکے کھانا چاہیے۔

Fresh walnuts pic

گاجر کے فوائد

گاجر میں بےشمار فوائد موجود ہوتے ہیں۔ اگر جسم میں حرارت بڑھ گئی ہو تو گاجر کا استعمال فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے کیونکہ گاجر میں ٹھنڈک موجود ہوتی ہے۔ گاجر آنکھوں کیلئے ایک بہترین غذا بھی ہے اور دوا بھی۔ اگر آنکھیں پیلی پر جائیں تو گاجر کا استعمال کرنا چاہیے۔ گاجر نظر کی کمزوری کو دور کرتی ہے اور نظر کو تیز کرتی ہے۔ جو افراد رات کو نیند نہیں آنے کی بیماری میں مبتلا ہیں گاجر ان کیلئے بےحد مفید ہے گاجر کا روزانہ استعمال پرسکون نیند مہیا کرتا ہے۔ گاجر دماغ کیلئے بہترین غذا ہے۔ گاجر دماغ کو طاقت فراہم کرتی ہے اور گاجر حافظہ کو تیز کرتی ہے۔ گاجر دل اور خون کے نظام کیلئے معاون ثابت ہوتی ہے۔ گاجر کے استعمال سے دل صحت مند اور مضبوط رہتا ہے۔ گاجر ہائی بلیڈپریشر کو کنٹرول میں رکھتی ہے۔ گاجر خون میں موجود فاضل مادوں کو جسم سے خارج کرتی ہے اور گاجر خون کو صاف کرتی ہے۔ گاجر خون کی کمی کو پورا کرتی ہے۔ اور گاجر جسم میں نیا خون بناتی ہے۔ گاجر کینسر کے مریضوں کیلئے بےحد مفید ہے۔ گاجر کینسر سے محفوظ رکھتی ہے۔ گاجر ذیابیطس کے مریضوں کیلئے بےحد فائدہ مند غذا ہے۔ گاجر خون میں شوگر کو بڑھنے نہیں دیتی شوگر کو کنٹرول میں رکھتی ہے۔ گاجر بواسیر کا شکار افراد کیلئے بہت زیادہ فائدہ مند ہے۔ زیادہ محنت مشقت کرنے والے افراد کیلئے گاجر کا استعمال فائدہ مند ہے۔ گاجر قوت مدافعت کو بڑھاتی ہے۔ گاجر ہڈیوں اور جوڑوں کے درد میں مبتلا افراد کیلئے بےحد مفید ہے گاجر ہڈیوں اور جوڑوں کو طاقت فراہم کرتی ہے۔ اس کے علاوہ گاجر کمر کے درد سے نجات دلاتی ہے۔ گاجر پٹھوں کو مضبوط کرتی ہے۔ گاجر جسم میں موجود اضافی چربی کو ختم کرتی ہے اور گاجر وزن کم کرتی ہے۔ گاجر جسم کو خوبصورت بناتی ہے۔ گاجر نظام انہضام کیلئے بےحد مفید ہے۔ گاجر معدے سے فاسد مادوں کو نکالتی ہے اور گاجر معدے کو صحت مند رکھتی ہے۔ گاجر قبض کشا ہے۔ گاجر پیٹ میں موجود کیڑوں کا خاتمہ کرتی ہے۔ گاجر آنتوں کی صفائی کرتی ہے اور گاجر آنتوں کو مختلف بیماریوں سے بچانے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔ گاجر جگر کیلئے بےحد مفید ہے۔ گاجر جگر میں موجود نقصان دہ فاسد مادوں کو جسم سے خارج کرتی ہے۔ اور گاجر جگر کو طاقتور بناتی ہے۔ جو مائیں اپنے بچوں کو دودھ پلاتی ہیں گاجر ان کو گاجر کا استعمال لازمی کرنا چاہیے گاجر ان کیلئے بےحد مفید ہے۔ اگر سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو گاجر کا استعمال کرنا چاہیے کیونکہ گاجر آرام دہ سانس لینے میں مدد فراہم کرتی ہے۔ دمے کے مرض میں مبتلا افراد کیلئے گاجر فائدہ مند ہے۔ گردے کی پتھری میں گاجر کے استعمال سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں گاجر کے استعمال سے پیشاب رک کر نہیں آتا۔ گاجر جلد کو خوبصورت بناتی ہے۔ گاجر ناخن لو حسین اور مضبوط کرتی ہے۔ روزانہ ایک گلاس گاجر کا جوس چہرہ صاف کرتا ہے۔ گاجر کے استعمال سے چہرے پر موجود پھوڑے پھنسیاں داغ دھبے جھریاں جھائیاں ختم ہوتی ہیں۔ گاجر چہرے کا پیلا پن ختم کرتی ہے اور چہرے کو سرخ بناتی ہے۔

گاجر کے نقصانات

گاجر میں بے شمار فوائد موجود ہونے کے ساتھ گاجر کے کچھ نقصانات بھی ہیں۔ اگر جسم میں حرارت موجود نہ ہو تو گاجر کا استعمال پیشاب کو تیز کرنے کا سبب بنتا ہے۔ گاجر ذیابیطس کے مریضوں کیلئے بےحد نقصان دہ ہے۔ گاجر کا زیادہ استعمال خون میں شوگر کی مقدار کو خطرناک حدتک بڑھاتا ہے۔ اس کے علاوہ گاجر کے حد سے زیادہ استعمال سے بال گرتے ہیں۔ اگر جسم میں تیزابیت اور خشکی موجود ہو تو گاجر کا استعمال ممنوع ہے۔ چھوٹے بچوں کو گاجر کا زیادہ استعمال نہیں کرانا چاہیے۔ اگر جسم میں رطوبات بڑھ چکی ہو تو گاجر کا استعمال بہت نقصان دہ ہے۔ گاجر کا حلوہ زیادہ نہیں کھانا چاہیے۔ بھوک کم لگتی ہو یا بھوک زیادہ لگتی ہو تو گاجر کا استعمال ممنوع ہے۔ اگر گاجر کھانے کے بعد الرجی ہوتی ہو تو گاجر نہیں کھانی چاہیے۔ گاجر کو صاف کئے بغیر گاجر کھانے سے معدے میں ورم الرجی ہوتی ہے۔