Okzaii

کریلا

کریلا ایک بہترین موسمی سبزی ہے۔ کریلا بیل میں لگتا ہے اور یہ بیل بہت مضبوط ہوتی ہے۔ کریلے کی بیل موسم گرما اور موسم برسات میں کثیر تعداد میں اگائی جاتی ہے۔ کریلے کی تاثیر خشک گرم ہے۔ کریلا کڑوی سبزیوں میں سے ایک ہے۔ کریلے کے استعمال سے بہت سارے لوگ آگاہ ہیں۔ کریلا ایک سبزی ہونے کے ساتھ ایک اچھی دوا بھی ہے۔ کریلا مختلف بیماریوں میں باقاعدگی سے استعمال کرایا جاتا ہے۔ ذیابیطس کے مریضوں کیلئے کیلا کسی نعمت سے کم نہیں۔ دنیا میں ذیادہ تر لوگ کریلے کو گوشت کے ساتھ ملا کر پکاتے ہیں۔ اس کے علاوہ کریلے کو چنے کی دال آلو کے ساتھ اور مختلف طریقوں سے پکایا جاتا ہے۔ صرف کریلا بھی بہت شوق سے کھایا جاتا ہے۔ کریلے کا جوس نکال کر بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ کریلے کا جوس بطور دوا استعمال کیا جاتا ہے۔ کریلے کا جوس کئی بیماریوں سے بچاتا ہے۔ کریلا جسم میں گرمی کو بڑھاتا ہے۔

Fresh bittergourd pic

کریلا کے فوائد

کریلے میں بے شمار فوائد موجود ہیں۔ کریلے کے استعمال سے جسم پر اچھے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ کریلا جسم میں طاقت اور توانائی کو برقرار رکھتا ہے۔ کریلا گردوں اور پھیپھڑوں کیلئے بےحد مفید ہے۔ کریلا گردوں اور پھیپھڑوں کو ایکٹیو کرتا ہے۔ کریلا گردے اور مثانے کی پتھری کیلئے معاون ثابت ہوتا ہے۔ کریلا انسانی جلد کیلئے بہترین غذا ہے۔ کریلا جلد کی بیماریوں سے بچاتا ہے۔ کریلا جلد پر نکلنے والے دانو دھبو کیل مہاسوں سے جلد کو محفوظ رکھتا ہے اور چہرہ کو صاف اور پرجوش بناتا ہے۔ کریلا انسان کو خوبصورت بناتا ہے۔ خارش ایک تکلیف دہ مرض ہے۔ کریلا ہر طرح کی خارش کو ختم کرتا ہے۔ کریلا پیٹ میں موجود کیڑے ختم کرتا ہے اور کریلا چربی سے بڑھنے والی بیماریوں سے بچاتا ہے۔ کریلا وزن کو کم کرتا ہے اور کریلا جسم کو اسمارٹ بناتا ہے۔ کیلا بلغم کو ختم کرتا ہے اور گلے کو صاف کرتا ہے۔ کریلا شوگر کے مریضوں کیلئے بےحد مفید ہے۔ کریلا خون میں شوگر کی مقدار کو خطرناک حدتک نہیں بڑھنے دیتا۔ کریلا ذیابیطس کے مریضوں کیلئے غذا بھی ہے اور دوا بھی ہے۔ کریلے کا جوس زیابیطس کے مریضوں کا بہترین علاج ہے۔ اگر آدھا گلاس کریلے کا جوس نکال کر ہردو دن بعد بطور دوا استعمال کیا جائے تو ذیابیطس کے مرض سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے۔ کریلا جوڑوں کے درد میں مبتلا افراد کیلئے بےحد مفید ہے۔ کریلا دل اور خون کیلئے بہترین غذا ہے۔ دل کے پاس خون کا دباؤ کم ہو، خون گندا ہوگیا ہو، خون میں تیزابیت موجود ہو تو کریلا فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے۔ کریلا فالج کے مریضوں کیلئے بےحد مفید ہے۔ اگر فالج کا خطرہ موجود ہو تو کریلے کا استعمال فالج سے بچاتا ہے۔ کریلے میں موجود آئرن خون میں سرخ خلیات کا اضافہ کرتا ہے۔ جب ہمارا نظام دوران خون صحیح کام نہیں کرتا ایسی صورت میں کریلا بہترین غذا ہے۔ کریلا دماغ کو توانائی فراہم کرتا ہے۔ کریلا ہماری ذہانت کو بڑھاتا ہے۔ کریلا اعصابی نظام کیلئے مفید غذا ہے۔ کریلا جسم میں موجود تیزابیت کو ختم کرتا ہے۔ کریلے کے جوس میں نمک ملا کر قبض اور الٹی کے مرض سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے۔

کریلا کے نقصانات

کریلے کے بے شمار فوائد ہونے کے ساتھ کریلے کے چند نقصانات بھی ہیں۔ جب ہمارے جسم کو کریلے کی ضرورت نہیں ہوتی اور ہم باقاعدگی سے کریلے کا استعمال کرتے ہیں تو کریلا ہمیں بیماری کی طرف لے جائے گا۔ کریلا ایک ہی دن میں دو ٹائم استعمال نہیں کرنا چاہیے ورنہ کریلا نقصان دہ ہو سکتا ہے۔ کریلا دو دن میں ایک بار کھائیں۔ کریلے کا روزانہ استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ کریلے کا جوس زیابیطس کے مریضوں کیلئے بہترین دوا ہے۔ لیکن کریلے کے جوس کا روزانہ باقاعدگی سے استعمال خون میں شوگر کو خطرناک حد تک کم کرسکتا ہے۔ چنانچہ کریلے کا جوس روزانہ استعمال نہ کریں۔ معدہ کے السر میں کریلے کا استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ کیونکہ کریلے میں معدہ کے السر کو بڑھانے کی صلاحیت موجود ہوتی ہے۔ جس کے منہ کا ذائقہ کڑوا رہتا ہو۔ جسم میں حرارت بڑھ جائے اور خشکی ہوجائے۔ ایسی صورت میں کریلے کا استعمال ممنوع ہے۔