Okzaii

فالسہ

فالسہ ایک بہترین موسمی پھل ہے۔ مسلمان رمضان کے مہینے میں فالسہ کا استعمال بہت زیادہ کرتے ہیں۔ کیونکہ فالسہ پیاس کی شدت کو کم کرتا ہے۔ فالسے کی تاثیر سرد اور خشک ہے۔ فالسہ مختلف رنگوں میں پایا جاتا ہے۔ زیادہ تر فالسے کالے اور لال ہوتے ہیں اور کچھ نیلے بھی ہوتے ہیں۔ فالسے کا ذائقہ میٹھا ہوتا ہے۔ اور اس میں تھوڑی کٹھاس بھی موجود ہوتی ہے۔ فالسے کا درخت قد میں چھوٹا ہوتا ہے۔ لیکن فالسے کے پتے بڑے ہوتے ہیں۔ اور فالسے کے پتوں سے بیڑی بنائی جاتی ہے

Fresh phalsa pic

فالسہ کے فوائد

فالسے میں بے شمار فوائد موجود ہیں۔ فالسے دل کیلئے بہترین غذا بھی ہے اور بہترین دوا بھی ہے۔ فالسے دل کو طاقت دیتے ہیں۔ فالسہ دل کی گھبراہٹ کو دور کرتا ہے۔ فالسہ دل کی بیماریوں کو دور کرتا ہے۔ فالسہ دل کے ورم کو دور کرتا ہے اور مزید ورم آنے نہیں دیتا ہے۔ اگر خون کا دباؤ دل پر بہت کم ہو تو فالسہ کا کھانا چاہیے۔ کیونکہ فالسہ دل پر خون کا دباؤ کم نہیں ہونے دیتا ہے۔ فالسہ بلیڈپریشر سے بچاتا ہے۔ اور فالسہ دل کی دھڑکن کو متوازن رکھتا ہے۔ فالسہ خون کو صاف کرتا ہے۔ فالسہ خون کی کمی کو دور کرتا ہے۔ اور فالسہ نیا خون پیدا کرتا ہے۔ فالسہ ذیابیطس کے مریضوں کیلئے مفید ہے۔ شوگر کو کنٹرول کرتا ہے۔ اگر جسم میں حرارت بڑھ جائے تو فالسے کا استعمال بےحد مفید ہے۔ فالسہ جگر کیلئے ایک بہترین غذا ہے۔ فالسہ جگر کی گرمی کو دور کرتا ہے۔ جن افراد کو احتلام بہت زیادہ ہوتا ہو فالسہ ان کیلئے بےحد مفید ہے۔ فالسہ منی کے قطرے گرنے سے روکتا ہے۔ فالسہ خواتین کی مخصوص بیماریوں کیلئے بےحد مفید ہے۔ فالسہ کینسر کے مریض کیلئے بہترین ہے۔ فالسہ کینسر ہونے کے خطرے کو کم کرتا ہے۔ فالسہ جسم میں قوت مدافعت کو بڑھاتا ہے۔ فالسہ یرقان اور پیلے یرقان میں بےحد مفید ہے۔ لیکن ڈاکٹر سے پوچھ کر استعمال کریں۔ فالسہ معدہ کیلئے بےحد مفید غذا ہے۔ فالسہ نظام ہاضمہ کو بہتر بناتا ہے۔ فالسہ پیٹ کے درد میں مبتلا افراد کیلئے بےحد مفید ہے۔ فالسہ جسم سے فاسد مادوں کو خارج کرتا ہے۔ فالسہ گرمی کے بخار میں بےحد مفید ہے۔ فالسہ سر کے درد میں فائدہ پہنچاتا ہے۔ فالسہ کا جوس ہچکی اور کہہ میں آرام دیتا ہے۔ فالسہ ہمارے جسم میں پیاس کی شدت کو کم کرتا ہے اور فالسہ پانی کی کمی کو پورا کرتا ہے۔ فالسہ مثانے کی گرمی کو دور کرتا ہے۔ فالسہ پیشاب آور ہے۔ فالسہ گردے کیلئے بےحد مفید ہے۔ فالسہ گردوں کو مختلف بیماریوں سے محفوظ رکھتا ہے اور فالسہ گردوں کی نشوونما کرتا ہے۔ فالسہ سینے کی جلن کو ختم کرتا ہے اور فالسہ جسم کو ٹھنڈا رکھتا ہے۔ فالسہ جلد کیلئے بےحد مفید ہے۔ فالسہ جلد کو لچک دار بناتا ہے اور فالسہ جلد کو نرم و ملائم رکھتا ہے۔ فالسہ چہرے پر موجود جھریاں جھائیاں پھوڑے پھنسیاں داغ دھبے پمپل ایکنی مہاسے ختم کرتا ہے۔ فالسے کا شربت جلد کو لمبے عرصے تک جوان رکھتا ہے۔

فالسہ کے نقصانات

فالسے میں بےشمار فوائد موجود ہونے کے ساتھ فالسے میں کچھ نقصانات بھی ہیں۔ اگر جسم میں حرارت کم ہو تو فالسے کا استعمال بہت زیادہ نقصان پہنچا سکتا ہے۔ کیونکہ فالسہ جسم میں حرارت کم کرتا ہے۔ فالسہ ٹائیفائیڈ بخار میں مبتلا افراد کیلئے بےحد نقصان دہ ہے۔ فالسہ قبض میں اضافہ کرتا ہے۔ فالسہ گیس پیدا کرتا ہے۔ اگر خون ہد سے زیادہ گھاٹی ہو تو فالسہ نقصان دہ ہے۔ سرد مزاج والے افراد فالسے سے فائدہ نہیں اٹھا سکتے۔ فالسے کا زیادہ استعمال سے سینے اور پھیپھڑوں کو نقصان پہچاتا ہے۔ ترش فالسہ نہیں کھانا چاہیے۔ جب بھی فالسہ کھائیں پکا ہوا کھائیں۔