Okzaii

آلو

آلو ایک بہترین سبزی ہے۔ آلو ایک پودے کی جڑ ہے. آلو ہر موسم میں بڑی تعداد میں دستیاب ہوتا ہے۔ آلو کی تاثیر سرد اور خشک ہوتی ہے۔ آلو کو مختلف طریقوں سے پکایا جاتا ہے۔ اور گوشت کے ساتھ ملا کر پکانے سے آلو اور بھی زیادہ ذائقہ دار سبزی بن جاتی ہے۔ آلو پوری دنیا میں اگائی جانے والی فصلوں میں سے ایک ہے۔ آلو دنیا میں سب سے زیادہ کھائی جاتی ہے۔ 15 صدی کے آخر میں ایک ہسپانوی نے جنوبی امریکہ میں آلو دریافت کیا اور اس کے بعد آلو یورپ سے ہوتا ہوا ہندوستان اور پھر چین گیا۔ آلو کی فصل برِصغیر (پاک و ہند ) سارا سال کاشت کی جاتی ہے۔ برصغیر (پاک و ہند) کا آلو سب سے زیادہ ذائقہ دار ہوتا ہے اور یہاں کا آلو پوری دنیا میں برآمد کیا جاتا ہے۔ ایران میں بھی اسکی کاشت بڑی تعداد میں کی جارہی ہے۔ دنیا میں آلو کی کئی اقسام موجود ہیں۔ لیکن آلو کی سرخ اور پیلی قسم بہت شوق سے کھائی جاتی ہے۔ کیونکہ یہ دونوں اقسام کھانے میں بے حد ذائقہ دار ہوتی ہیں۔ 70 فیصد سے زائد آلو چپس کی صورت میں استعمال کیا جاتا ہے۔

Fresh potato pic

آلو کے فوائد

آلو میں بے شمار فوائد موجود ہیں۔ آلو انسانی دماغ کیلئے بہترین غذا ہے۔ آلو انسانی دماغ کو طاقت دیتا ہے۔ آلو دماغی صحت کو بہتر کرتا ہے۔ آلو انسان کو ذہنی سکون مہیا کرتا ہے۔ وہ لوگ جو نید نہیں آنے کی بیماریوں میں مبتلا ہیں ان کیلئے آلو بے حد مفید ہے۔ آلو کے استعمال سے پرسکون نید ملتی ہے جو ہماری صحت کیلئے بے حد مفید ہے۔ آلو گردوں کیلئے مفید غذا تصور کی جاتی ہے۔ آلو گردوں کو طاقت دیتا ہے۔ آلو گردوں کی نشوونما کرتا ہے۔ آلو گردوں کی کئی اندرونی بیماریوں سے محفوظ رکھتا ہے۔ کیونکہ آلو میں 87 فیصد پانی ہے۔ اگر ہمارے جسم میں رطوبات بڑھ چکی ہو تو آلو کا استعمال فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے۔ ناک سے پانی ٹپکنا اور چھینکیں آنا ایک تکلیف دہ مرض ہے۔ آلو چھینکوں کو روکنے کیلئے بہترین ہے اور آلو ناک میں آنے والے پانی کو خشک کرتا ہے۔ آلو کے استعمال سے جوڑوں اور پٹھوں کے درد سے نجات ملتی ہے۔ آلو جوڑوں اور پٹھوں کو طاقت دیتا ہے۔ آلو کا استعمال الزائمر کے مریض کیلئے بے مفید کرار دیا جاتا ہے۔ آلو جلد کیلئے بہت مفید ہے۔ آلو جلد پر دانے نکلنے سے روکتا ہے۔ اور آلو دانو کو دباتا ہے۔ آلو جلد پر موجود داغ دھبے جھریاں جھائیاں کو ختم کرتا ہے۔ آلو جلد کو پرکشش بناتا ہے۔ آلو جلد کو صحت مند رکھتا ہے۔ اگر آنکھوں کے گرد سیاح ہلکے موجود ہو تو آلو کاٹ کر رکھنے سے یہ سیاح ہلکے ختم کئے جاسکتیں ہیں۔ اگر کوئی آگ سے جل جائے۔ اور آگ سے جلی ہوئی جلد پر آلو کاٹ کر لگانے سے چھالا نہیں ہوتا اور سکون مہیا ہوتا ہے۔ آلو کھانے کے علاوہ سلور کے برتن کو چمکانے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ آلو ابال کر پھر آلو نکال لیں اور پانی کو ایک کھنٹہ برتن میں رکھا رہنے دیں۔ پھر پانی پھینک کر برتن صابن سے دھولیں۔ برتن صاف ہو جائیں گے۔

آلو کے نقصانات

آلو کے فائدہ ہونے کے ساتھ آلو کے بے شمار نقصانات ہوتے ہیں۔ آلو دیر سے ہضم ہونے والی غذا ہے۔ آلو ایک بادی سے بھرپور غذا ہے۔ آلو نظام دوران خون کیلئے بے حد نقصان دہ غذا ہے۔ آلو خون کو گندا کرتا ہے اور آلو دل کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔ آلو کو ہفتے میں چار دفعہ یا اس سے زیادہ استعمال کرنے سے بلیڈپریشر میں خطرناک حد تک اضافہ ہوتا ہے۔ اور آلو کی چپس کھانے سے یہ خطرہ 70 فیصد تک بڑھ جاتا ہے۔ آلو کے استعمال سے دل کی صحت خراب ہو جاتی ہے۔ آلو دل کی دیواروں کو کمزور کرنے کا سبب بنتا ہے۔ آلو جگر کو بے حد نقصان پہنچاتا ہے۔ یہ جگر کی رفتار کو ہلکی کرنے کا سبب بنتا ہے اور آلو جگر پر برے اثرات ڈالتا ہے۔ T. Bایک خطرناک مرض ہے۔ آلو کے استعمال سے T.B کی بنیاد پڑھتی ہے۔ اس لیے T.B کے مریض آلو کا استعمال نہیں کرسکتے۔ السر کے مریض آلو کا استعمال نہیں کرتے ہیں۔ کیونکہ آلو السر کو بڑھاتا ہے۔ آلو پھیپھڑوں کو خراب کرنے کا سبب بنتا ہے۔ آلو پھیپھڑوں کیلئے بےحد نقصان دہ ہے۔ آگر گیس ہو اور ہوا میں بدبو ہو تو آلو کا استعمال ممنوع ہے۔ اگر جسم میں رطوبات کی کمی ہو تو آلو کا استعمال ممنوع ہے۔ اگر جسم میں رطوبات کی کمی ہو تو آلو کا استعمال ممنوع ہے۔ چہرے کا رنگ پیلا رہتا ہو اور پیشاب پیلا آتا ہو۔ تو آلو کا استعمال نقصان دہ ہے۔ رسولی کے مریض آلو کو ہرگز استعمال نہیں کریں۔ کیونکہ آلو رسولی کو پیدا کرنے کا باعث بنتا ہے۔ آلو میں موجود چربی ہمارے جسم میں چربی کو خطرناک حد تک بڑھاتا ہے۔ یہ چربی ہمارے لئے بےحد نقصان دہ ہے۔ آلو ہمارے جسم میں خارش کو بڑھاتا ہے۔ آلو ہمیں بری عادات میں مبتلا کرتا ہے۔